299

شعبہ انجینرنگ و میڈیسن کے طلباء و طالبات کے لیے کچھ رہنما اصول۔۔۔

یہ ایک واضح حقیقت ہے کہ انجینرنگ و میڈیکل پڑھنے والوں پر پڑھائی و کام کا دباؤ بہت زیادہ ہوتا ہے مگر اس کے علاوہ بھی بہت سی وجوہات ہیں جن کی وجہ سے ان کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے. ان تمام میں سے چند وجوہات یہ درج ذیل ہیں۔

انجینرنگ پڑھنے والوں کے حوالے سے قیاس آرائیاں
لوگ اکثر انجنیئر ز کے حوالے سے قیاس آرائیاں کرتے نظر آتے ہیں جن میں یہ کہ ان کی تو کوئی زندگی ہی نہیں ہوتی ہے۔ یہ لوگوں میں گھلتے ملتے نہیں ہیں اس میں کوئی شک نہیں کہ انجنیئرز و ڈاکڑز کی زندگی پڑھتے پڑھاتے ہی گزرتی ہے مگر اس کی کوئی حقیقت نہیں کہ اکژیت میں انجنیئرز و ڈاکڑز کی کوئی سرگرمیاں نہیں ہوتیں۔ کامیاب ترین انجنیئرز و ڈاکڑز وہی ہیں جو مختلف پروگرامات اور سیمینارز میں شریک ہوتے ہیں اور مختلف مقابلوں میں حصّہ لیتے ہیں۔ ہم سب کو انجنیئرز و ڈاکڑز کے بارے میں قیاس آرائیاں کرنے سے پہلے یہ سوچ لینا چاہیے کہ آخر وہ بھی انسان ہیں اور ان کی تعلیم بہرحال آسان نہیں ہے۔

بعض ٹیچرز کے لیکچرز سر کے اوپر سے گزر جانا
بعض دفعہ بہت کوشش کے باوجود کچھ ٹیچرز کے لیکچرز سمجھ میں نہیں آتے اور یہ کسی ایک طالب علم کا مسئلہ نہیں ہے۔ بہت سے طلباء یہی شکایات کرتے نظر آتے ہیں۔ اس کی بنیادی وجہ یہ ہے کہ بعض اساتذہ کو وہ مضامین دے دیے جاتے ہیں جو ان کی دلچسپی یا قابلیت کے لحاظ سے نہیں ہوتے اور اس کا سارئے کا سارا خمیازہ طلباء کو اٹھانا پڑتا ہے۔ یہ بھی ایک وجہ ہے جوانجنیئرز و ڈاکڑز کی زندگی سخت بنا دیتی ہے۔

برے دوستوں کی کمپنی
برے دوستوں کی کمپنی بھی متاثر کرتی ہے بعض دوست آپ کو مختلف غیرضروری یا فضول مشاغل میں لگا دیتے ہیں جس کی وجہ سے آپ کی پڑھائی متاثر ہوتی ہے اور ناکامی کا منہ دیکھنا پڑھتا ہے۔ ہمیشہ اچھے دوست بنائیں تاکہ وہ آپ کو پڑھائی میں بھی مدد کریں۔ یاد رکھیں کہ اچھے دوست اچھے مقام تک پہنچنے کا ذریعہ بنتے ہیں۔

نیند پوری نہ ہونا
ایک عمومی مسلہ نیند پوری نہ ہونا ہے۔ جس کی وجہ سے پڑھائی خراب ہوتی ہے۔ رات کو دیر تک پڑھائی کرنا اور صبح صبح کالج یا یونیورسٹی چلے جانا۔ مگر نیند پوری کرنا بہت ضروری ہے۔ عموما طلباء لیکچرز کے درمیان سو رہے ہوتے ہیں جو کہ انتہائی غلط ہے۔ رات میں جلدی سونے کی عادت ڈالیں تاکہ صج جلد بیدار ہو کر اللہ کا نام لے کر صبح کا آغاز کرتے ہوئے تروتازہ ہو کر تعلیمی اداروں میں جائیں۔

آخر میں اتنی گذارش ہے کہ اس میں کوئی شک نہیں کہ ا نجینرنگ بہت مشکل ہے مگر ایک دفعہ جب آپ نے ایک راستہ چن لیا تو اب ثابت قدم رہیں۔ اپنے وقت کا صحیح استعمال کریں. مختلف سرگرمیوں میں حصّہ لیں۔ اس سے آپ کا وقت بھی اچھا گزرے گا. تو پھر سخت محنت کریں اور اس وقت کو یادگار بنائیں کیونکہ آنے والے دونوں میں یقیناََ آپ اس وقت کو بہت یاد کریں گے۔

دعا گو و خیر اندیش
ایڈمن – لکھ دو

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.