115

ماہ رمضان، خود تشخیصی و تبدیلی کا ساتواں دن۔۔۔

ہم اپنے کام کاج کی جگہ پر اپنے سربراہ اور ساتھی کارکنوں کو متاثر کرنے کی نیت سے اپنے کام کے مطابقت سے بہترین لباس زیب تن کرتے ہیں۔
ہم اس بات کو یقینی بناتے ہیں کہ ہمارے لباس کی تراش خراش اور دیکھاوا بہترین ہو جب ہم دوستوں کے ساتھ بازار میں گھوم رہیں ہوں۔
پر جب بات آتی ہے اللہ سبحانی وتعالی کی، جو تمام سربراہوں کا سربراہ اور انسان کا سب سے قریبی دوست ہے، تب ہماری صفائی اور ظاہری حالت/پہناوا نہ جانے کس کونے میں گم ہو جاتی ہے۔
تو پس آئیندہ کے لیے ہم سب آج سے ہی اس بات کو یقینی بنائے گے کہ انشاءاللہ اپنی اگلی نماز میں پہلی صف میں صاف ستھرئے و مناسب لباس اور خوشبو کے ساتھ مسجد یعنی اللہ کے گھر آداب کے عین مطابق ہو حاضر ہونگے۔
حضرت عبداللہ بن مسعودؓ سے روایت ہے کہ نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم نے ارشاد فرمایا کہ،
” وہ شخص جنت میں نہ جائے گا جس کے دل میں ذرہ برابر بھی غرور اور گھمنڈ/تکبر ہو گا۔”
ایک آدمی نے یہ سن کر کہا: کوئی انسان پسند کرتا ہے کہ اس کا کپڑا اور اس کا جوتا اچھا/خوبصورت نظر آئے؟
آپﷺ نے فرمایا کہ،
اللہ رب العزت خوبصورت/جمیل ہیں اور خوبصورتی/جمال کو پسند فرماتے ہیں، اور تکبر تو یہ ہے کہ حق کو جان کر ہٹ دھرمی سے/نہ مانا جائے اور لوگوں کی حق تلفی کی/حقیر سمجھا جائے۔‘‘ ﴿صحیح مسلم﴾

سوچیئے گا ضرور۔۔۔
اور آگاہ ضرور کیجیئے گا کہ کیا رائے ہے آپ سب کی؟
پر جواب دینے سے پہلے ہم سب خود کو آئینہ میں ضرور دیکھنا ہو گا۔
حسبی اللہ لا الہ الا ھو علیہ توکلت وھو رب العرش العظیم (آیت 129، سورتہ توبہ – القرآن)
اللہ سبحان وتعالی ہم سب کو مندرجہ بالا باتیں کھلے دل و دماغ کے ساتھ مثبت انداز میں سمجھنے، اس سے حاصل ہونے والے مثبت سبق پر صدق دل سے عمل کرنے کی اور ساتھ ہی ساتھ ہمیں ہماری تمام دینی، سماجی و اخلاقی ذمہ داریاں بطریق احسن پوری کرنے کی ھمت، طاقت و توفیق عطا فرما ئے۔ آمین!

(تحریر – محترم محمد شیراز جاوید اعوان )

نوٹ: لکھ دو کا اپنے تمام لکھنے والوں کے خیالات سے متفق ہونا قطعی ضروری نہیں۔
اگر آپ بھی لکھ دو کے پلیٹ فارم پر لکھنا چاہتے ہیں تو اپنا پیغام بذریعہ تصویری، صوتی و بصری یا تحریری شکل میں بمعہ اپنی تصویر، مکمل نام، فون نمبر، لنکڈان، فیس بک اور ٹویٹر آئی ڈیز اور اپنے مختصر مگر جامع تعارف کے ساتھ admin@likhdoo.com پر ارسال کردیجیے۔

=====================================================================

Ramadan Reinspired: Day Saven…

We dress up in our best attire at work to impress our boss & coworkers.
We make sure our swag is on point when we are at the mall chilling with our friends.
But when it comes Allah, the Boss of bosses & the Closest of all friends, unfortunately our hygiene and appearance take a back seat.
Let’s make sure that from the next salah(pryer) on wards, we look presentable and are perfumed in a manner that conforms to the etiquette of the Masjid.
The Prophet (Sall Allāhu ʿalay-hi wa-sallam’) said:
“No one will enter Paradise who has an atom’s-weight of pride in his heart.”
A man said, “What if a man likes his clothes to look good and his shoes to look good?”
The Prophet (Sall Allāhu ʿalay-hi wa-sallam’) said, “Allah is beautiful and loves beauty. Pride means denying the truth and looking down on people.” (Muslim)

Do Think About it!

And Let us Know What’s Your Opinion/Reviews?
But Before Answering, All of us have to Look Ourselves into The Mirror.
حسبی اللہ لا الہ الا ھو علیہ توکلت وھو رب العرش العظیم – القرآن سورتہ توبہ، آیت 129
Sufficient for me is Allah ; there is no deity except Him. On Him I have relied, and He is the Lord of the Great Throne. Al Quran – 9:129
O Allah! Give all of us the courage, strength and ability; that we get understand and act upon the Positive lesson in this message with positively open heart & mind. And sincerely follow all our religious, social and moral responsibilities as well. Aamen

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.