157

ماہ رمضان، خود تشخیصی و تبدیلی کا پہلا دن۔۔۔

شام میں ہماری مائیں، فلسطین میں ہمارے بھائی، عراق میں ہماری بہنیں، کشمیر میں ہمارے خاندان اورایسی ہی بہت سی جگہیں ہے جہاں پر ان سب لوگوں میں سے بیشتر کو بناء کچھ کھائے حتی کہ باسی روٹی کا بھی ایک ٹکڑا کھائے بناء ہی ہر رات کو بھوکا سونے پڑتا ہے۔
تو بس اگلی باراگر ہم میں سے کوئی بھی اپنے کھانے کی آخری پلیٹ یا خوراک کا نوالہ پھینکنے لگے تو یہ بات ذہن نشین رکھیں کہ ٹھیک اُسی لمحے دنیا کے کسی کونے میں ایک ماں اپنے بچوں کو بھوکے پیٹ ہی سلانے کی کوشش کر رہی ہے۔
پس اسی لیے ہمیں اپنے اردگرد کے لوگوں اور ماحول کے بارے میں مزید سوچ بچار اور خیال رکھنا ہو گا۔ ساتھ ہی ہمیں اپنے خاندان اور دوستوں میں اِسی سوچ کی حوصلہ افزائی کرنے کی ضرورت ہے۔ جبکہ ہم میں سے کوئی بھی اگر کسی کو کھانا برباد کرتا دیکھے تو برملا اس کے خلاف بولیں۔ قرآن کے اس آیت کو مد نظر رکھتے ہوئے۔۔۔
“اے نبی آدم! ہر نماز کے وقت اپنے تئیں مزّین کیا کرو اور کھاؤ اور پیؤ اور بےجا نہ اڑاؤ کہ خدا بےجا اڑانے والوں کو دوست نہیں رکھتا۔” [القرآن – سورة الأعراف – 7:31]

سوچیئے گا ضرور۔۔۔
اور آگاہ ضرور کیجیئے گا کہ کیا رائے ہے آپ سب کی؟
پر جواب دینے سے پہلے ہم سب خود کو آئینہ میں ضرور دیکھنا ہو گا۔
حسبی اللہ لا الہ الا ھو علیہ توکلت وھو رب العرش العظیم (آیت 129، سورتہ توبہ – القرآن)
اللہ سبحان وتعالی ہم سب کو مندرجہ بالا باتیں کھلے دل و دماغ کے ساتھ مثبت انداز میں سمجھنے، اس سے حاصل ہونے والے مثبت سبق پر صدق دل سے عمل کرنے کی اور ساتھ ہی ساتھ ہمیں ہماری تمام دینی، سماجی و اخلاقی ذمہ داریاں بطریق احسن پوری کرنے کی ھمت، طاقت و توفیق عطا فرما ئے۔ آمین!

(تحریر – محترم محمد شیراز جاوید اعوان )

نوٹ: لکھ دو کا اپنے تمام لکھنے والوں کے خیالات سے متفق ہونا قطعی ضروری نہیں۔
اگر آپ بھی لکھ دو کے پلیٹ فارم پر لکھنا چاہتے ہیں تو اپنا پیغام بذریعہ تصویری، صوتی و بصری یا تحریری شکل میں بمعہ اپنی تصویر، مکمل نام، فون نمبر، لنکڈان، فیس بک اور ٹویٹر آئی ڈیز اور اپنے مختصر مگر جامع تعارف کے ساتھ admin@likhdoo.com پر ارسال کردیجیے۔

=====================================================================

Ramadan Reinspired – Day One….

Our mothers in Syria, Our brothers in Palestine, Our sisters in Iraq, Our family in Kashmir and everywhere else. Most of them go to bed hungry every night without even a bite of stale bread to chew upon.
So, the next time we are throwing away that last plate or that morsel of food, remember that somewhere around the world a mother is trying to put her starving children to sleep.
We need to be more considerate about others and the environment, and encourage our family & friends to do the same. When you see someone wasting food, speak against it.
“O children of Adam, take your adornment at every masjid, and eat and drink, but be not excessive. Indeed, He likes not those who commit excess.” [Al-Quran – Surah al-A‘raaf 7:31]

Do Think About it!
And Let us Know What’s Your Opinion/Reviews?
But Before Answering, All of us have to Look Ourselves into The Mirror.
حسبی اللہ لا الہ الا ھو علیہ توکلت وھو رب العرش العظیم (آیت 129، سورتہ توبہ – القرآن)
“Sufficient for me is Allah ; there is no deity except Him. On Him I have relied, and He is the Lord of the Great Throne.” Al Quran – 9:129
O Allah! Give all of us the courage, strength and ability; that we get understand and act upon the Positive lesson in this message with positively open heart & mind. And sincerely follow all our religious, social and moral responsibilities as well. Aamen

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.