557

عید مبارک و فلسفہ دعا!

تمام امت مسلمہ کو ایک دن پرانی اور ہماری نئی والی تازہ عید کی دلی مبارک باد!
جانے کتنی عیدیں گزر جانی پر ہم مسلم امت کب عید اور اپنے دین اسلام کا حقیقی فلسفہ و پیغام سمجھ پائیں گے؟
کب اخوت و یگانت کے پرچم تلے اکٹھے ہونگے؟
دل میں کچھ زباں پر کچھ، یہی وجہ ہے کہ آج مسلم امہ کی نہ بات کی وقعت ہے نہ دعا کی….

بقول شاعر،
دل میں چھپا ہو کفر تو بیکار ہے دعا
مومن کی ہو زبان تو تلوار ہے دعا
بعدِ دعا قبول کے آثار کیوں نہیں
لگتا ہے مصلیحت میں گرفتار ہے دعا
ہے ’د‘ سے درود عبادت ہے ’ع‘ سے
آخر میں اہلیبیت کا اقرار ہے دعا
مولا کا بغض دل میں زباں میں اثر کہاں
ہر لمحہ ایسے شخص کی بیکار ہے دعا
بیمار ہو دوا ہو دوا میں اثر نہ ہو
ایسےمرض کی آخری ہتھیار ہے دعا
شایانؔ اب دوا میں تیری کیوں نہ ہو اثر
تیری دوا میں شاملِ آثار ہے دعا

اللہ سبحانی وتعالی ہمارے باطن روشن کرے اور ہمارا حامی و ناصر ہو. آمین!

سوچیئے گا ضرور۔۔۔
اور آگاہ ضرور کیجیئے گا کہ کیا رائے ہے آپ سب کی؟
پر جواب دینے سے پہلے ہم سب خود کو آئینہ میں ضرور دیکھنا ہو گا۔
حسبی اللہ لا الہ الا ھو علیہ توکلت وھو رب العرش العظیم – ، القرآن سورتہ توبہ، آیت 129
اللہ سبحان وتعالی ہم سب کو مندرجہ بالا باتیں کھلے دل و دماغ کے ساتھ مثبت انداز میں سمجھنے، اس سے حاصل ہونے والے مثبت سبق پر صدق دل سے عمل کرنے کی اور ساتھ ہی ساتھ ہمیں ہماری تمام دینی، سماجی و اخلاقی ذمہ داریاں بطریق احسن پوری کرنے کی ھمت، طاقت و توفیق عطا فرما ئے۔ آمین!

(تحریر – محترم محمد شیراز جاوید اعوان)

مندرجہ بالا تحریر سے آپ سب کس حد تک متفق ہیں یا ان میں کوئی کم بیشی باقی ہے تو اپنی قیمتی آراء سے ضرور آگاہ کر کے میری اور سب کی رہنمائی کا ذریعہ بنئیے گا۔ کیونکہ ہر شخص/فرد/گروہ/مکتبہ فکر کا اپنا اپنا سوچ اور دیکھنے کا انداز ہوتا ہے اور اس لیے ہمیں اس سب کی سوچ و نظریہ کا احترام ملحوظ خاطر رکھتے ہوئے اس کی کسی بات/نکتہ کو قابل اصلاح پائیں تواُس شخص/فرد/گروہ/مکتبہ فکر یا ادارئے کی نشاندہی اور تصیح و تشریح کی طرف اُن کی توجہ اُس جانب ضرور مبذول کروائیں۔

نوٹ: لکھ دو کا اپنے تمام لکھنے والوں کے خیالات سے متفق ہونا قطعی ضروری نہیں۔
اگر آپ بھی لکھ دو کے پلیٹ فارم پر لکھنا چاہتے ہیں تو اپنا پیغام بذریعہ تصویری، صوتی و بصری یا تحریری شکل میں بمعہ اپنی تصویر، مکمل نام، فون نمبر، لنکڈان، فیس بک اور ٹویٹر آئی ڈیز اور اپنے مختصر مگر جامع تعارف کے ساتھ admin@likhdoo.com پر ارسال کردیجیے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.