240

ماہ رمضان ، خود تشخیصی و تبدیلی کا بیسواں دن۔ ۔ ۔

کیا آپ یہ کمی محسوس کرتے ہیں کہ ماہ رمضان کے پہلے بیس روزوں کے ساتھ عبادات کے حوالے سے آپ صیح و بھرپور طریقے سے انصاف نہیں کر پائے۔ اگر ایسا ہے تو کوئی فائدہ نہیں اس بات پر مزید غور کرنے یا دل چھوٹا کرنے کا۔ کیونکہ ابھی بھی آپ کے پاس مزید بیش قیمت دس روزئے باقی ہیں۔ تو بس ان باقی روزوں کے لیے اپنی کمر کس لیں اور اپنی رفتار بڑھا لیں۔ خزانوں سے بھری رات “لیلتہ القدر” کو خود سے قطعاََ ضائع اور محروم مت ہونے دیجیے گا۔ قرآن پاک کے مطابق،
“ہم نے اس( قرآن) کو شب قدر میں نازل (کرنا شروع) کیا۔ اور تمہیں کیا معلوم کہ شب قدر کیا ہے؟ شب قدر ہزار مہینے سے بہتر ہے۔ اس میں روح (الامین) اور فرشتے ہر کام کے (انتظام کے) لیے اپنے پروردگار کے حکم سے اترتے ہیں۔ یہ( رات) طلوع صبح تک (امان اور) سلامتی ہے۔” (القرآن، سورة القدر -1 تا 5)
اور جیسا کہ مشہور و عظیم سکالر اسلام ابن تیمیہ نے فرمایا کہ،
“حقیقت میں شمار ہوتا ہے اچھا اختیتام نہ کہ ناقص شروعات۔”
تو چلیں ان آخری دنوں سے اچھے اختیتام کے سفر کا آغاز کریں۔

سوچیئے گا ضرور۔۔۔
اور آگاہ ضرور کیجیئے گا کہ کیا رائے ہے آپ سب کی؟
پر جواب دینے سے پہلے ہم سب خود کو آئینہ میں ضرور دیکھنا ہو گا۔
حسبی اللہ لا الہ الا ھو علیہ توکلت وھو رب العرش العظیم (آیت 129، سورتہ توبہ – القرآن)
اللہ سبحان وتعالی ہم سب کو مندرجہ بالا باتیں کھلے دل و دماغ کے ساتھ مثبت انداز میں سمجھنے، اس سے حاصل ہونے والے مثبت سبق پر صدق دل سے عمل کرنے کی اور ساتھ ہی ساتھ ہمیں ہماری تمام دینی، سماجی و اخلاقی ذمہ داریاں بطریق احسن پوری کرنے کی ھمت، طاقت و توفیق عطا فرما ئے۔ آمین!

(تحریر – محترم محمد شیراز جاوید اعوان)

مندرجہ بالا تحریر سے آپ سب کس حد تک متفق ہیں یا ان میں کوئی کم بیشی باقی ہے تو اپنی قیمتی آراء سے ضرور آگاہ کر کے میری اور سب کی رہنمائی کا ذریعہ بنئیے گا۔ کیونکہ ہر شخص/فرد/گروہ/مکتبہ فکر کا اپنا اپنا سوچ اور دیکھنے کا انداز ہوتا ہے اور اس لیے ہمیں اس سب کی سوچ و نظریہ کا احترام ملحوظ خاطر رکھتے ہوئے اس کی کسی بات/نکتہ کو قابل اصلاح پائیں تواُس شخص/فرد/گروہ/مکتبہ فکر یا ادارئے کی نشاندہی اور تصیح و تشریح کی طرف اُن کی توجہ اُس جانب ضرور مبذول کروائیں۔

نوٹ: لکھ دو کا اپنے تمام لکھنے والوں کے خیالات سے متفق ہونا قطعی ضروری نہیں۔
اگر آپ بھی لکھ دو کے پلیٹ فارم پر لکھنا چاہتے ہیں تو اپنا پیغام بذریعہ تصویری، صوتی و بصری یا تحریری شکل میں بمعہ اپنی تصویر، مکمل نام، فون نمبر، لنکڈان، فیس بک اور ٹویٹر آئی ڈیز اور اپنے مختصر مگر جامع تعارف کے ساتھ admin@likhdoo.com پر ارسال کردیجیے۔

=====================================================================

Ramadan Reinspired: Day Twenty….

Do you feel like you’ve let yourself down because you didn’t make the most out of the first 20 days of Ramadan?
There is no point pondering on the time lost but we can surely do better in the few days that we have left. Let’s speed up our game and make the most out of the last few days.
Don’t miss out on the treasures of Laylatul Qadr or the Night of decree as mention in Holy Quran,
“Indeed, We sent the Qur’an down during the Night of Decree. And what can make you know what is the Night of Decree? The Night of Decree is better than a thousand months. The angels and the Spirit descend therein by permission of their Lord for every matter. Peace it is until the emergence of dawn.” (Al Quran, Al-Qadr-1 to 5)

An the great scholar of Islam Ibn Taymiyyah [R] said:
“What really counts are good endings, not flawed beginnings.”
So, Let’s make the last days the start of a journey to a good end.

Do Think About it!

And Let us Know What’s Your Opinion/Reviews?
But Before Answering, All of us have to Look Ourselves into The Mirror.
حسبی اللہ لا الہ الا ھو علیہ توکلت وھو رب العرش العظیم – القرآن سورتہ توبہ، آیت 129
Sufficient for me is Allah ; there is no deity except Him. On Him I have relied, and He is the Lord of the Great Throne. Al Quran – 9:129
O Allah! Give all of us the courage, strength and ability; that we get understand and act upon the Positive lesson in this message with positively open heart & mind. And sincerely follow all our religious, social and moral responsibilities as well. Aamen

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.